Chairperson’s statement on APC

میر مرتضی بھٹو کا خون ابھی خشک نہیں ہوا
اے پی سی اور اسٹیبلشمینٹ ایک پیج پر ہے:
میری امی میری انقلابی استاد تھیں: غنوی بھٹو
لبنان: پیپلز پارٹی (شہید بھٹو) کی چیئرپرسن محترمہ غنوی بھٹو نے اپنے شہید شوہر ااور کامریڈ لیڈر کی 24ویں برسی پر کہا ہے کہ دو دہائیاں گذر چکی ہیں مگر شہید مرتضی کا خون آج بھی خشک نہیں ہوا۔آج بھی ان کا اور ان کے ساتھیوں کا خون عوام کے آنسوؤں اور پارٹی کارکنوں کے پسینے کی صورت بہہ رہا ہے۔جب تک انصاف نہیں ملے گا ہم احتجاجی ماتم کرتے رہیں گے۔میر مرتضی ایک بہادر اور معصوم انقلابی تھا۔ اس کا خون روز قیامت تک بہتارہے گا۔ اس کا خون سیاست میں ہمارا قطب نما ہے۔ آج ہم فخر سے کہہ سکتے ہیں کہ ہم نے اپنے عظیم انقلابی قائد کا راستہ نہیں چھوڑا۔ ہم منزل کی طرف کیوں جائیں؟ منزل ہمارے پاس آئے گی۔ محترمہ غنوی بھٹو نے ان تمام ساتھیوں کو سرخ سلام پیش کیا ہے جنہوں نے اپنے ضلعوں میں تاریخی ناانصافی کے خلاف علم بلند کیا اور اپنے شہید قائد کے ساتھ اظہار وفا کیا۔ ان کے نعروں کی گونج مجھے لبنان کی فضاؤں میں بھی سنائی دی۔ انہوں نے پارٹی کے وفادار کامریڈوں کو سرخ سلام پیش کیا ہے۔
غنوی بھٹو نے گشتہ روز منعقد ہونی والی اے پی سی کو اقتدار سے محروم اور کرپٹ سیاستدانوں کا مجمعہ قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ یہ سب لوگ اسٹیبلشمینٹ کے توجہ کے طالب ہیں۔عمران اور ان میں کوئی فرق نہیں ہے۔ یہ سب ایک ہی تھالی کے بیگن ہیں۔ انہوں نے ملک کے لیفٹسٹ، لبرل اور نام نہاد انقلابیوں کی طرف سے اس اے پی سی سے امیدیں وابستہ کرنے پر مایوسی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ آپ سب اقتدار پرستوں کی چالبازیوں کا شکار کیوں ہو جاتے ہیں؟
”نہ خنجر چلے گا نہ تلوار ان سے
یہ بازو عوام کے آزمائے ہوئے ہیں،،
شہید بھٹو کی چیئر پرسن نے اپنے تمام دوستوں اور پارٹی کے کارکنوں کی طرف سے اپنی ماں کی رحلت پر دکھ کے اظہار پر نم آنکھوں سے محبت اور مہربانی کا پیغام موصول کیا ہے۔ اور انہوں نے اپنی والدہ کے بارے میں کہا ہے کہ ”وہ میری صرف والدہ نہیں بلکہ انقلابی استاد بھی تھیں۔ میں نے ان کی گود میں عوامی محبت کا منترا سنا۔ وہ بہت عظیم ماں تھیں۔ میں ان کا غم طاقت میں تبدیل کرنے کی کوشش میں مصروف ہوں۔

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *